آسٹریلیا سے باہر

آسٹریلیا نے اپنے سرحدی تحفظ کی صلاحیتوں کو مضبوط بنایا ہے۔ جوکوئی کشتی سےآسٹریلیا کےغیرقانونی سفرکی کوشش کرکےگا اس کا پتہ لگا لیا جاۓ گا، اس کوروکا جاۓ گا، اور واپس بھیج دیا جاۓ گا۔

آسٹریلیا کی سرحدیں غیر قانونی سمندری نقل مکانی کے لئے بند ہیں

جوکوئی آسٹریلیا کاغیرمجاز شدہ کشتی سے سفر کرنے کی کوشش کرےگا وہ اپنی روانگی کے مقام کولوٹا دیا جائے گا، اپنے آبائی ملک واپس بھیج دیا جاۓ گا یا کسی دوسرے ملک منتقل کردیا جائے گا-

کشتی سےآسٹریلیا کاغیرقانونی سفر کرنے والوں میں، کوئی بھی نہیں جسے آسٹریلیا میں رہنے کی اجازت ہو۔

آسٹریلیا کے سرحدی تحفظ کی سخت پالیسیوں کوآسٹریلیا کی سرحدوں کی حفاظت، انسانی اسمگلنگ کامقابلہ کرنےاورلوگوں کوکھلے سمندر میں کشتی کے خطرناک سفر کی کوشش سے بازرکھنے کے لئے تشکیل دیا گیا ہے۔

انسانی اسمگلروں کے جھوٹ پر یقین نہ کریں

انسانی اسمگلرآسٹریلیا میں بسنے کے غلط وعدےکےذریعے لوگوں کوقائل کرتے ہیں تاکہ وہ اپنے پیسے ان کے ہاتھ میں دیں.ان کے جھوٹ پر یقین نہ کریں. سچ یہ ہے کہ کشتی سے آسٹریلیا کے غیرقانونی سفرکی ادائیگی انسانی اسمگلر کو کرنے والوں کوکبھی بھی وہ نہیں ملتا جس کیلۓ انھوں نے ادائیگی کی تھی۔

انسانی اسمگلر آپ کی حفاظت یا مستقبل کے بارے میں پرواہ نہیں کرتے۔ وہ صرف آپ کے پیسے میں دلچسپی رکھتے ہیں-

محفوظ اور قانونی طریقے سے سفرکریں

آسٹریلیا میں داخل ہونے کا صرف ایک راستہ ہے؛ آسٹریلوی ویزے کے ساتھ-

آسٹریلیا کے محفوظ اور قانونی سفر کے لئے اپنے اختیارات کے بارے میں مزید جاننے کے لئے، وزٹ کریں محکمۂ ہوم افیئرز کی ویب سائٹ .

آسٹریلیا کی سرحدیں مضبوط ہیں

آسٹریلیا کی سرحدیں مضبوط ہیں

پانچ سال پہلے جب آسٹریلوی حکومت نے آپریشن ساورن بارڈرز شروع کیا تھا، تب سے, ہم کامیابی سے کشتیاں روکتے آ رہے ہیں اور ہم نے آسٹریلیا میں انسانوں کی سمگلنگ کے خطرے کو کچل دیا ہے۔.

آسٹریلوی حکام نے نہ صرف 33 کشتیوں کو روکا، اور 827 افراد کو ان کی روانگی کے مقام پر واپس بھیجا بلکہ ہم نے اپنے علاقائی معاونین کے ساتھ کام کرتے ہوۓ 70 سے زیادہ انسانی سمگلنگ کرنے والی مہموں کو روانہ ہونے سے پہلے ہی روک دیا۔.

سمندر کے راستے انسانی سمگلنگ اب بھی آسٹریلیا کی سرحدوں کی حفاظت اور سلامتی کے لۓ ایک مسلسل خطرہ ہے۔.

حال ہی میں ویتنام سے انسانی سمگلنگ کرنے والی کشتی کی آمد ایک بروقت یاد دہانی ہے کہ خطرہ ختم نہیں ہوا ہے۔.

ان افراد کو جلدی سے تلاش کرکے حراست میں لے لیا گیا اور انکے وطن بھیج دیا گیا۔. کسی کو آسٹریلیا میں آباد نہیں کیا گیا۔.

اور حالانکہ یہ کشتی ناکام ہوئی،, انسانی سمگلر اس کی آمد کو اپنی اشتہار بازی کیلئے استعمال کر رہے ہیں تاکہ دوسرے مجبور لوگوں کو کشتیوں میں سوارہونے کیلئے مائل کریں۔.

انسانی سمگلروں کی بات نہ سنیں۔.

آسٹریلیا نے اس خطرے سے نمٹنے کیلئے اضافی بحری اور فضائی نگرانی کے وسائل مختص کيے ہیں۔.

اگرآپ کشتی کے ذریعے آسٹریلیا آنے کی غیرقانونی کوشش کریں گے توآپ کو روک دیا جاۓ گا۔.

ہماری سرحدی حفاظت کی پالیسیاں نہ بدلی ہیں، اورنہ بدلیں گی۔.

ہم اپنی قوم کی خود مختاری اور سلامتی پر کوئی سمجھوتہ نہیں کریں گے۔.

علاقائی پروسیسنگ کے انتظامات جاری رہیں گےاور علاقائی پروسیسنگ کے تحت آنے والے کسی شخص کو آسٹریلیا میں آباد نہیں کیا جاۓ گا۔.

آپریشن ساورن بارڈرز کو مضبوط بنانے کے ذریعے انسانی سمگلروں کو ایک سخت پیغام بھیجا جا رہا اور ان کو بھی جو سمگلروں کی خدمات حاصل کرنا چاہتے ہوں۔ اپنی سرحدوں کی حفاظت، انسانی سمگلنگ کی روک تھام اورسمندرمیں اموات کو روکنے کیلئے, آسٹریلوی حکومت کا عزم پہلے سے کہیں زیادہ مضبوط ہے۔.

آسٹریلیا نے اپنے سرحدی تحفظ کی صلاحیتوں کو مضبوط بنایا ہے

آسٹریلوی سرحدی فوج، بحریہ اور فضائیہ نے اپنی کوششیں بڑھائی ہیں، یہ یقینی بنانے کےلۓکہ ہم پتہ لگائیں اور روکیں کسی بھی مشکوک ناؤ کو جو آسٹریلوی علاقے کے قریب پہنچے۔

آسٹریلیا کی سرحدیں غیر قانونی منتقلی کیلئے بند ہیں

آسٹریلیا کی سرحدیں ہراس فرد کے لئے بند ہیں جو غیر قانونی طور پر یہاں آنے کی کوشش کرتا ہے، اور وہ بدستور بند رہیں گی ۔

تین سال ہوگئے جب انسانی اسمگلنگ کرنے والی آخری کشتی آسٹریلیا تک پہنچی تھی اوراب ہماری سرحدیں پہلے سے کہیں زیادہ مضبوط ہیں

جو بھی غیر قانونی طور پر کشتی سے آسٹریلیا پہنچنے کی کوشش کریگا اسے واپس کردیا جائے گا یا پھر اس کے وطن واپس بھیج دیا جائیگا ۔

انسانی اسمگلروں کی طرف سے دھوکہ نہ کھائیں. وہ آپ کے پیسے لینے کے لئے کچھ بھی بول سکتے ہیں ۔

غیرقانونی طریقے سے آسٹریلیا پہنچنے کی کوشش میں کوئی مالی فائدہ نہیں ہے ۔

امریکہ سے تارکین وطن کی آبادکاری کا ہمارا معاہدہ صرف ایک مرتبہ کا ہے جو کبھی بھی دہرایا نہیں جائیگا ۔

علاقائی پروسیسنگ کے ممالک میں سے کوئی بھی فرد آسٹریلیا میں دوبارہ آباد نہیں کیا جائے گا

غیر قانونی طور پر کشتی سے آسٹریلیا پہنچنے کی کوشش بے سود اور انتہائی خطرناک ہے

آپکو پکڑلیا جائیگا اور واپس کردیا جائیگا ۔

آسٹریلیا کی کشتیوں کی واپسی کی پالیسی میں کوئی تبدیلی نہیں ہوئی

جو بھی شخص غیر قانونی طور پر بذریعہ کشتی آسٹریلیا آنے کی کوشش کرے گا، اس کا پتہ چلا کر اسے روک دیا جاۓ گا اور آسٹریلیا کی سمندری حدود سے محفوظ طور پر نکال دیا جاۓ گا۔ اصول سب پر لاگو ہوتے ہیں۔ کوئی استثناء نہیں پایا جاتا۔